انڈر 19 ایشیا کپ:مسلسل تیسری بار ہندوستان بنا فاتح

Story by  ایم فریدی | Posted by  [email protected] | 1 Years ago
انڈر 19 ایشیا کپ:مسلسل  تیسری بار ہندوستان  بنا فاتح

 

دبئی : ٹیم انڈیا نے انڈر 19 ایشیا کپ کے فائنل میں سری لنکا کو 9 وکٹوں سے شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کر لیا۔ بارش کی وجہ سے ہونے والے میچ میں ہندوستان کو 38 اوورز میں 102 رنز کا ہدف ملا تھا جسے ٹیم نے 21.3 اوورز میں 1 وکٹ کے نقصان پر باآسانی حاصل کر لیا۔

ہندوستانی ٹیم نے مسلسل تیسری بار انڈر 19 ایشیا کپ پر قبضہ کیا اور مجموعی طور پر 8ویں بار۔ خاص بات یہ ہے کہ اس ٹورنامنٹ کی تاریخ میں جب بھی ہندوستان نے فائنل کھیلا ہے، اس نے ٹائٹل جیتا ہے۔ تاہم، 2012 میں ہندوستان اور پاکستان برابری کی وجہ سے مشترکہ فاتح قرار پائے تھے۔

ہندوستان کو 102 رنز کا ہدف ملا تھا۔

ہدف کے تعاقب میں ہندوستان کا آغاز خراب رہا اور اوپنر ہرنور سنگھ 5 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اس کے بعد انگکرش رگھوونشی اور شیخ رشید نے سری لنکن گیند بازوں کو دوسرا موقع نہیں دیا۔ دونوں کھلاڑیوں نے دوسری وکٹ کے لیے 113 گیندوں میں 96 رنز جوڑے اور ٹیم کو چیمپئن بنانے کے بعد ہی میدان سے واپس لوٹے۔ رگھوونشی 56 اور راشد 31 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

اس سے قبل سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 38 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 106 رنز بنائے۔ فائنل جیسے میچ میں ٹیم کا کوئی بھی بلے باز بڑی اننگز نہیں کھیل سکا اور چھ کھلاڑی ایک ہندسے کے سکور پر آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔

ہرنور کا بلے زور سے بھاگا

۔ 18 سالہ ہرنور سنگھ نے اس ٹورنامنٹ میں اپنی بلے بازی سے سب کو متاثر کیا ہے۔ ٹورنامنٹ کے پہلے ہی میچ میں انہوں نے متحدہ عرب امارات کے خلاف 130 گیندوں پر 120 رنز بنائے۔ اس اننگز میں 11 چوکے بھی شامل تھے۔ پاکستان کے خلاف دوسرے میچ میں ہرنور نے مشکل حالات میں 59 گیندوں پر 46 رنز بنائے۔

 ان کا بلے نے اے ایف جی کے خلاف بھی بہت کچھ بولا اور انہوں نے 74 گیندوں میں 9 چوکوں کی مدد سے شاندار 65 رنز بنائے۔ تاہم سیمی فائنل میں بنگلہ دیش کے خلاف (15 رنز) اور فائنل میں سری لنکا کے خلاف (5 رنز) ہی سکور کر سکے۔ ہرنور اس ٹورنامنٹ میں 250+ رنز بنانے والے واحد کھلاڑی ہیں۔

 لنکا کے بلے بازوں نے مایوس کیا

 ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ سری لنکا کے لیے ٹھیک نہیں تھا۔ چوتھے اوور میں روی کمار نے چمندو وکرما سنگھے کو آؤٹ کر کے ٹیم کو پہلا جھٹکا دیا۔ وکرما سنگھے 2 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ ایس ایل کی دوسری وکٹ راج باوا کے حصے میں آئی، انہوں نے شیون ڈینیئلز کو 6 رنز پر آؤٹ کیا۔ انجلا بندارا 9 رنز بنانے کے بعد کوشل تمبے کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہو گئیں۔ اس کے بعد کوشل نے پون پتھیراجا (4 رنز) کو بولڈ کیا۔

 اوستوال کی حیرت انگیز

 لنکا کی 5ویں وکٹ سدیشا راجا پاکسے (14 رنز) کی صورت میں گری۔ ان کی وکٹ وکی اوستوال کے کھاتے میں آئی۔ وکی یہیں نہیں رکے اور اس کے بعد انہوں نے اپنے ایک اوور میں مخالف ٹیم کو 2 جھٹکے لگائے۔ 27ویں اوور میں لیگ اسپنر وکی نے پہلی گیند پر کپتان ڈیونتھ ویلالیز (9 رن) اور تیسری گیند پر رنودا سوماراتانے (7 رن) کو آؤٹ کیا۔  میچ میں سری لنکا نے 88 گیندوں کے بعد 14.4 اوورز میں پہلی باؤنڈری لگائی۔ سری لنکا کے چھ کھلاڑی واحد ہندسے میں آؤٹ ہوئے۔ یاسرو روڈریگو 19 رنز کے ساتھ سری لنکا کی اننگز کے ٹاپ ا سکورر رہے۔