مٹر - دانے دانے میں ہے صحت کا راز

Story by  ایم فریدی | Posted by  [email protected] | 1 Years ago
 مٹر کھانے کے صحت پر اثرات
مٹر کھانے کے صحت پر اثرات

 

 

موسم سرما کے آتے ہی سبزیوں کی بہار آجاتی ہے، سبزیوں کی دُکان مختلف اور نت نئی سبزیوں سے سج جاتی ہے جن میں سے ایک پھلیوں میں شمار کی جانے والی سبزی مٹر ہے۔

گھر کے بڑے ہوں یا بچے ہر کوئی مٹر کے شوقین ہوتے ہیں یہ ہی وجہ ہے کہ امور خانہ انجام دینے والے موسم سرما میں سال بھر کے لئے مٹر کا اسٹاک جمع کرلیتے ہیں۔ چھوٹے چھوٹے موتیوں کی مانند یہ دانے جتنے ذائقہ دار ہوتے ہیں اس کے اتنے ہی طبی فوائد بھی ہیں -

چند طبی فوائد درج ذیل ہیں۔

مٹر میں آئرن، زنک اور کاپر موجود ہوتے ہیں، جو سرد موسم میں جسم کو ضروری غذائی اجزا فراہم کرتے ہیں، اس کے ساتھ ساتھ مٹر میں کافی مقدار میں اینٹی آکسیڈنٹس پائے جاتے ہیں جو قوت مدافعت کو مضبوط بناتےہیں۔

طبی ماہرین کے مطابق مٹر کا استعمال آنکھوں کے لئے بھی مفید ہے، مٹر میں موجود لیوٹن اور زیکزانتھن بینائی کو بڑھانے میں معاون ثابت ہوتی ہے۔

یورپ اور امریکا میں حال ہی میں کی گئی تحقیق میں دعویٰ کیا گیا کہ مٹر الزائمر سے لڑنے میں مدد دیتا ہے۔ مٹر دل اور گردے کو صحت مند رکھنے کے ساتھ ساتھ بلڈ پریشر کو بھی کنٹرول کرتا ہے جبکہ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے فائدہ مند ہے۔

مٹر میں پائے جانے والا سیلینیم جوڑوں کے درد اور سوجن کو کم کرتا ہے۔ مٹر میں وٹامن اے اور ای وافر مقدار میں پایا جاتا ہے، یہ دونوں وٹامنز جلد کے لئے بہت فائدے مند تصور کئے جاتے ہیں۔

طبی ماہرین کے مطابق اگر ہرے مٹر کو پیس کر چہرے پر لگایا جائے تو یہ قدرتی اسکرب کا کام کرتا ہےاور جلد کو نکھارنے میں مدد دیتا ہے۔ لیکن وہ افراد جو وزن کم کرنے کے خواہشمند ہوں وہ اس کا استعمال ذرا احتیاط سے کریں، کیونکہ ان چھوٹے چھوٹے دانوں میں کیلوریز کی بھاری مقدار پائی جاتی ہے