سنسکرت زبان و ادب کا مطالعہ کریں گے 311 مسلم طلباء

Story by  اے ٹی وی | Posted by  [email protected] | Date 19-09-2023
سنسکرت زبان و ادب کا مطالعہ کریں گے 311 مسلم طلباء
سنسکرت زبان و ادب کا مطالعہ کریں گے 311 مسلم طلباء

 

جے پور۔ سنسکرت کو بطور زبان پڑھنے اور سنسکرت ادب کا مطالعہ کرنے میں نوجوانوں کی دلچسپی بڑھ رہی ہے۔ سوشل میڈیا اور انٹرنیٹ کے دور میں نہ صرف ہندوستانی بلکہ غیر ملکی طالب علم بھی خاص طور پر مسلم ممالک کے طلباء ویدوں کی زبان کو پڑھنے اور سمجھنے میں دلچسپی لے رہے ہیں۔ اس کی تازہ ترین مثال جگد گرو رامانندچاریہ راجستھان سنسکرت یونیورسٹی جے پور ہے، جہاں 16 ستمبر تک نئے سیشن میں سنسکرت زبان کے مفت کورسز کے لیے 56712 درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔

درخواست دہندگان میں، ملک کی مختلف ریاستوں کے ساتھ ساتھ بیرون ملک کے طلباء نے سنسکرت اور ہندوستانی وید فلسفہ کے مطالعہ میں دلچسپی ظاہر کی ہے۔ یونیورسٹی نے 'گلوبل سنسکرت سروس' پروجیکٹ کے تحت اس سیشن سے مفت سنسکرت پڑھانے کی اسکیم شروع کی ہے۔

اس میں دنیا کے کسی بھی ملک، ذات، مذہب اور فرقے سے تعلق رکھنے والا 4 سال سے 100 سال تک کا فرد داخلہ لے سکتا ہے۔ 4 سال سے 15 سال تک کے بچوں کو خصوصی طور پر تیار کیے گئے 'شیشو سنسکرت' کورس میں داخلہ دیا گیا ہے۔ ان کورسز میں داخلہ لینے کی آخری تاریخ 30 ستمبر ہے۔

راجستھان کے ساتھ ساتھ آندھرا پردیش، جموں و کشمیر، کرناٹک، اڈیشہ، مہاراشٹر، مدھیہ پردیش، جھارکھنڈ، بہار، مغربی بنگال، اتر پردیش، گجرات اور دہلی کے مسلم امیدواروں نے بھی سنسکرت کے مختلف کورسز کے لیے درخواستیں دی ہیں۔ اب تک موصول ہونے والی درخواستوں میں سے 311 مسلم طلباء کی ہیں۔ ان میں سے 181 مرد اور 130 لڑکیوں نے سنسکرت پڑھنے میں دلچسپی ظاہر کی ہے۔ سنسکرت میں کل 18 مضامین میں کورس دستیاب ہیں۔ بنگلہ دیش سے تعلق رکھنے والی ثریا اسلام ریا نے ہندوستانی فلسفہ اور سنسکرت بولنا سیکھنے کے لیے داخلہ لیا ہے۔

بنگلہ دیش سے محمد امین الاسلام نے سنسکرت گرامر کورس کے لیے درخواست دی ہے۔ ایران کی مریم علی زادہ نے ہندوستانی فلسفہ کا موضوع چنا ہے۔ نیپال سے حمیدہ تبسم نے روحانیت اور اخلاقیات کے لیے درخواست دی ہے۔ اس منصوبے کو ملک اور دنیا بھر سے بہت اچھا رسپانس ملا ہے۔ حکومت اس پروجیکٹ کو چلانے کے لیے 5 کروڑ روپے کی گرانٹ دے گی، تاکہ سنسکرت کے پرچار کے لیے اسے مسلسل چلایا جا سکے۔